Testimonials

What the people of eminence say about him!

(Former Prime Minister)
It was all for interfaith dialogue and harmony under the leadership of Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri… When personality like Shaykh-ul-Islam Dr Tahir-ul-Qadri presents to the world his viewpoint about Islam, I feel pleased, satisfied and proud that we are followers of universal religion like Islam…

Click for details…

(Former Prime Minister)
The levels of progress achieved by MQI could not be possible without firm commitment and devotion. The founder of MQI, Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri, never got even a single penny from government of Pakistan or from any other government for that matter. Whatever progress it has made is not less than…

Click for details…

(Former Prime Minister & Chairman Senate)
Dr Tahir-ul-Qadri has accomplished unmatchable and historic feat in reconciling Islam with modern-day demands and reviving the faith. He has struggled to prove that Islam is a religion of peace through his religious preaching. No doubt Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri is man of peace, harmony and human development at the global level…

Click for details…

(Former Prime Minister)
He has taken practical steps for the promotion of interfaith harmony. He is a man imbued with the spirit of sympathy with people. I say to the extent that Dr Tahir-ul-Qadri is a doctor, Tahir and expert i.e. he is expert of knowledge and has the capability of speaking at every topic. He gets to the bottom of every problem and presents its solution. I pray for his health and long life…

Click for details…

(Prime Minister of Pakistan)
None can promote interfaith harmony better than Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri. His services for promotion of international brotherhood and peace are praiseworthy. He is a principled personality who never compromised on principles for sake of power. I salute him for his courage with which he resigned from the National Assembly…

Click for details…

(Principal Officer, American Consulate)
We need to promote mutual coexistence and tolerance among our religions. Minhaj-ul-Quran International is rendering all-important services for the spread of mutual harmony and interfaith dialogue. Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri is an enlightened leader whose thought is helping us establish peace in the world…

Click for details…

(Chairman Christian Coordination Council)
Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri is a proud leader of great mission for interfaith harmony, peace and interfaith dialogue. He is not only a leader of Muslims but Christian community also considers him their leader. He has established higher example of religious harmony and tolerance among religions by inviting us to worship in the Mosque…

Click for details…

(Chairman Sikh Nankana Foundation, US)
His services for peace, harmony and interfaith dialogue hare playing their effective role internationally. I benefit from the speeches and books of Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri. His viewpoint on human rights and other global issues is very argumentative and above religious biases and divides…

Click for details…

(writer and distinguished intellectual)
If Pakistan gets a leader like him, its destiny will be put on the right track. Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri has highlighted this realization through his writings and speeches that we need to get together against militancy, extremism and radicalism…

Click for details…

(Vice Chancellor Lahore University for Women)
The services rendered by Dr Tahir-ul-Qadri for reviving the moral and spiritual values of life by bringing about reforms in education in Pakistan are praiseworthy. If awareness about women rights continued like, change would soon come one day…

Click for details…

(Prominent Scholar, South Africa)
I am hugely impressed with the efforts and services being rendered by Dr Tahir-ul-Qadri for the renaissance and revival of Muslim Umma. I have not seen more organized and well-coordinated organization or movement anywhere in the world than Tehreek Minhaj-ul-Quran…

Click for details…

(Imam Shahi Mosque Delhi)
Visiting the central secretariat of Minhaj-ul-Quran is a matter of great honour and privilege for me. It is not possible for me to express in words the satisfaction and happiness over the services being rendered by Dr Tahir-ul-Qadri. I pray to Allah to grant us an opportunity to take part…

Click for details…

I visited the Minhaj University where I found a beautiful blend of the modern and ancient science giving birth to the hope that this movement would render significant sacrifices for the uplift of Islam globally. The founder of the Idara, his companions and teachers deserve congratulations…

Click for details…

(Prominent legal expert)
You have to protect yourself in this country. People will be jealous of you. People will try to make life difficult for you. I can see what qualities and potential Allah Almighty has blessed you with. Would that people had insight to recognize your talent and supported you…

Click for details…

(Former Chief Justice of Pakistan)
In my view, unity, dynamic struggle and enlightened reform are the call of the present century. Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri and his Tehreek has the potential of responding to this challenge. I pray for his and Islam’s success…

Click for details…

(Former Chief Justice, Lahore High Court)
Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri’s integrity, untiring struggle, beauty of his character and thoughts coupled with his piety make him a unique flower of the Islamic garden. There are two types of people: those who love him and those who fear him…

Click for details…

(Former Chief Justice of Pakistan)
I am greatly impressed by the commitment of the workers of Tehreek Minhaj-ul-Quran with their mission. Especially work, address, emotions, love and sincerity of Dr Muhammad Tahir-ul-Qadri have dwelled in my heart…

Click for details…

(Former Chief of Army Staff)
In my view, it is difficult to measure intellectual stature and scholarly depth of Dr Tahir-ul-Qadri. The unique and amazing thing is how single person should be able to achieve what Dr Tahir-ul-Qadri has done in such a short span of time…

Click for details…

(Chairman PTI and ex-cricketer)
Dr Tahir-ul-Qadri is one of such people who have zeal and truth in his emotions. Let me put it in some other way that their emotions are young. We are in dire need of such leaders today who should be able to guide the nation in the right direction…

Click for details…

(Former Governor of the Punjab)
I would go to the extent of saying that a common man cannot even think of it. My familiarization with him related to his being a religious leader and a thinker but I am convinced of his political wisdom now. We respect him and hold him in high esteem…

Click for details…

(Former President of Pakistan)
I think those people who are afraid of others for reasons of scholarship and level of intellect of others are basically afraid of themselves. Dr Tahir-ul-Qadri is a successful politician and insightful man. His policies will stand…

Click for details…

(Former Prime Minister of Pakistan)
The way MQI has presented Islam as a role model and introduced courses and syllabi on education in commensurate with the contemporary demands is no doubt dire need of the hour today. MQI enjoys respectable position among these private institutions due to its achievements…

Click for details…

(Former Chief Justice of Pakistan)
Had a person like Tahir-ul-Qadri been born abroad, he would surely have been counted among the greatest personalities of the world. But we have the habit of honouring people when they are no more in this world…

Click for details…

(Member Parliament, Canada)
I believe the personality of Professor sahib beacon of light and hope for us. I wish from the core of my heart that this Tehreek lead the Muslim world. May Allah enable us all to cooperate with it!…

Click for details…

Dr Tahir-ul-Qadri’s personality is multi-dimensional and the way he has spread the vast network of Minhaj-ul-Quran across the globe deserves our collective appreciation. People should follow him actively
ہم ادارہ منہاج القرآن اور ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کے کام سے بہت مطمئن ہیں… ہر کسے باشد جو بھی اس ادارہ منہاج القرآن کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہا ہے وہ خود کو طریقہ قادریہ پر نہ سمجھے اور یہ بھی نہ خیال کرے کہ وہ اسلام کی کوئی خدمت کر رہا ہے، بلکہ وہ مذہب کو سخت نقصان پہنچا رہا ہے…

کلک برائے تفصیل…

’’لوگو! آپ نے اس بچے کا خطاب تو سن لیا ہے، میں آپ کو گواہ بنانا چاہتا ہوں کہ ہمیں اس بچے پر فخر ہے، ان شاء اللہ ایک دن ایسا آئے گا کہ یہی بچہ (محمد طاہرالقادری) عالم اسلام اور اہلسنت کا قابل فخر سرمایہ ہو گا۔ میں تو شاید زندہ نہ ہوں لیکن آپ میں سے اکثر لوگ دیکھیں گے کہ یہ بچہ آسمانِ علم و فن پر نیر تاباں بن کر چمکے گا۔ اس کے علم و فکر اور کاوش سے عقائد اہلسنت…

کلک برائے تفصیل…

تحریک منہا ج القران کے بارے میں بہت کچھ سنا تھا لیکن آج یہ سب کچھ اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے تو محسوس ہوا کہ حقیقت کے مقابلے میں کم سنا تھا۔ یہ مبارک اور خوشنما ثمرات یقینا ایک ستھری، زرخیز زمین اور پاکیزہ بیج کا نتیجہ ہیں۔ شیخ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاف نیت اور پاکیزہ حسن کو لے کر نکلے ہیں…

کلک برائے تفصیل…

اس نوجوان (محمد طاہرالقادری) کا خطاب آپ نے سنا اور اسی سے ان کی قابلیت کا اندازہ بھی کرلیا ہوگا۔ میں یہ بتانا چاہتا ہوں کہ ان کے والد گرامی جو خود بھی ایک معتبر عالم اور معروف طبیب تھے اور میرے دوست تھے، یہ محمد طاہرالقادری ان کے بیٹے اور تربیت یافتہ ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے اس نوجوان کو بہت ساری صلاحیتوں سے مالا مال کیا ہے…

کلک برائے تفصیل…

خدائے قدوس کا ہم پہ احسان ہے کہ اس نے آج کے دور میں اس مردِ مجاہد جناب پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کو حسنِ بیان اور دردِ دل کے ساتھ سوچ، ذہن اور دل کی وہ صلاحیتیں عطا فرمائی ہیں کہ جن کی بدولت سب طلسم پارہ پارہ ہو جائیں گے اور وہ دن دور نہیں، جب غلامانِ مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ہاتھ میں کامیابی کا پرچم لہرا رہا ہو گا…

کلک برائے تفصیل…

اس عالمگیر تحریک سے دین کو فائدہ اور فروغ مل رہا ہے تو اس کی مخالفت کا مطلب ہو گا اس پر قبر میں بندش ہو گی لہذا اس کی مخالفت کرنے سے پرہیز کرنا چاہئے۔ اختلاف رائے ہر شخص کا بنیادی حق ہے لیکن دین کے معاملہ میں شدید ردعمل اور بغض رکھنا درست نہیں۔ طاہرالقادری اور تحریک منہاج القرآن کی مخالفت، دین سے بغاوت کرنے کے مترادف ہے…

کلک برائے تفصیل…

محترم ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے مجھے تقدیم لکھنے کے لیے اپنی کتاب ’’المنہاج السوي من الحدیث النبوي‘‘ ارسال کی… اس میں کوئی شک نہیں کہ مؤلف نے اس کتاب کو اس دیدہ زیب شکل میں لانے کے لئے محنتِ شاقہ سے کام لیا ہے تاکہ سنتِ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے احیاء میں اپنا حصہ ڈال سکیں اور اس کو آسان صورت میں علماء، محققین اور محبین کے لیے پیش کر سکیں…

کلک برائے تفصیل…

میں نے ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب کی کتاب ’’المنہاج السوي من الحدیث النبوي صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ‘‘ کا مطالعہ کیا ہے، بے شک یہ ایک عظیم کتاب ہے۔ اس لئے بھی کہ یہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی صحیح احادیث کے قابلِ ذکر مجموعہ پر مشتمل ہے اور اس لئے بھی کہ یہ مجموعہ حدیث عقیدہ، عبادات اور اخلاقیات کے متعدد ابواب پر مشتمل ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ہم نے منہاج القرآن کے مختلف شعبہ جات اور سرگرمیوں کو ملاحظہ کیا تو ہماری عقل دنگ رہ گئی… ہم یہ تمنا کرتے ہیں کہ منہاج القرآن کی پوری دنیا میں شاخیں ہوں اور ہماری یہ خواہش ہے کہ ہم بھی اس تحریک کے سپاہی بن کر خدمت کا فریضہ ادا کریں۔

کلک برائے تفصیل…

محترم المقام پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب بھی ان لوگوں میں سے ہیں جنہوں نے سابقین کے طریق پر چلتے ہوئے سید الاولین والآخرین کی احادیث کی خدمت کے لیے کمر ہمت باندھی۔ انہوں نے نہ صرف احادیث کا ذخیرہ کھنگال کر اس میں سے…

کلک برائے تفصیل…

منہاج القرآن ایک عالمی سطح کی اسلامی تحریک ہے اور اس کے قائد و بانی ہمارے روحانی بیٹے ہیں۔ ہمیں فخر ہے کہ ڈاکٹر پروفیسر طاہر القادری کی خدمات عالمی سطح پر اسلام کی عظمت و سربلندی کا باعث ہیں۔ پاکستان کے جملہ عقیدت مندان غوث اعظم منہاج القرآن کے ساتھ ہر ممکن تعاون کیا کریں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری بانی منہاج القرآن کی اتحاد ملت اور اسلامی تعلیمات کے فروغ کے لئے خدمات قابل ستائش ہیں، ڈاکٹر طاہرالقادری ایک نابغہ عصر روزگار شخصیت ہیں ۔ وہ اسلام کی نشاۃ ثانیہ کے لئے پوری امت اسلامیہ کے ترجمان اور اسلام کے ایک کامیاب وکیل ہیں۔ وہ عالم اسلام کے لئے قابل فخر سرمایہ ہیں…

کلک برائے تفصیل…

تحریک منہاج القرآن بین الاقوامی سطح پر منظم انداز میں تبلیغ دین کا جوریضہ سرانجام دے رہی ہے، میں اس سے بہت متاثر ہوا ہوں، اور بلاشبہ یہ قائد تحریک جناب شیخ الاسلام پروفیسرڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی شبانہ روز محنت کا نتیجہ ہے۔

کلک برائے تفصیل…

مجھے یہ دیکھ کر دلی مسرت ہوئی ہے کہ منہاج القرآن کے اس تربیتی مرکز کے روحانی سرپرست سیدنا طاہر علاؤالدین الگیلانی کا مرکز فیض بھی بغداد ہے اور اس مرکز منہاج القرآن کا نام بھی بغداد ٹاؤن ہے، تو یہ خطہ نام اور کام کے اعتبار سے سیدنا شیخ عبدالقادرجیلانی سے منسوب ہو کر عالم اسلام کا عظیم روحانی مرکز بن گیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

تحریک کے قائد شیخ الاسلام پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے اس دور کی جدید ٹیکنالوجی اور جدید تقاضوں کو سامنے رکھتے ہوئے عالم اسلام کو درپیش چیلنجز کا جواب دینے کا عزم کر رکھا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میں آج اس خوبصورت محفل میں ہر طرف طلباء کے نورانی چہرے دیکھ رہا ہوں۔ اور یقینا ان نوجوانوں کو اپنے مربی اور استاد ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کا فیض مل رہا ہے۔ ڈاکٹر طاہرالقادری اسلام کے فروغ کے لئے یہ نوجوان تیار کر رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

میں ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی احیائے اسلام اور دین کی سربلندی کے لئے کی جانے والی کاوشوں اور خدمات سے بہت متاثر ہوا ہوں۔ میں نے دنیا بھر میں کوئی بھی تحریک یا تنظیم، تحریکِ منہاج القرآن سے بہتر منظم اور مربوط نہیں دیکھی۔

کلک برائے تفصیل…

منہاج القرآن کے مرکزی سیکرٹریٹ میں تحریک کے شعبہ جات اور ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کیخدمات کو دیکھ کر مجھے نہایت خوشی حاصل ہوئی اور ایسا اطمینان ملا، جس کو الفاظ میں بیان کرنا میرے لئے ممکن نہیں۔

کلک برائے تفصیل…

’’میں شیخ الاسلام حضرت مولانا ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی دین اسلام کے لئے خدماتِ جلیلہ سے بے حد متاثر ہوا ہوں۔ منہاج القرآن کے مرکز پر آ کر، یہاں کے نظم و نسق کو دیکھ کر قلبی مسرت ہوئی ہے۔ یہاں کے لوگوں میں خلوص، محبت اور خدمتِ دین کا جذبہ بلاشبہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی تربیت کا نتیجہ ہے۔

کلک برائے تفصیل…

عالم اسلام میں تحریک منہاج القرآن کی کامیابی تحریک کے بانی اورسر پرست اعلیٰ شیخ الاسلام علامہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی عظیم علمی اور فقید المثال شخصیت کی مرہون منت ہے۔ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کا قرآنی علوم، معارف اسلامی اور جدید عصری علوم پر مکمل عبور اور حسن خطاب کی خداد داد صلاحیتوں کی وجہ سے ان کے عشاق اور محبان ان کی نورانی اور پر فیض شخصیت اور محبت سے فیض یاب ہوتے ہیں اور شیخ الاسلام کی راہنمائی سے سعادت کی راہ پا رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

مورخہ9ربیع الثانی 1429ھجری کو تحریک منہاج القرآن العالمی کے مرکز کا وزٹ کیا یہ ایک حسین شب تھی کہ ہم نے شیخ الاسلام مولٰنا الدکتور محمد طاہرالقادری کی زیر قیادت عالمی سطح پر تحریک کے زیر اہتمام اسلام کے فروغ دعوت دین کی کوشش اور طریقہ کار کے بارے میں آگہی ملی اور ایمان کی اعلیٰ ترین بات جو دیکھنے میں آئی وہ وحدت امت مسلمہ قابل ستائش ہی

کلک برائے تفصیل…

اللہ تعالیٰ نے حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی امت کو شیخ الاسلام مفکر اسلام پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری مدظہ کی صورت میں ایک عظیم نعمت عطا فرمائی ہے۔ عالم اسلام کی عالمگیر تحریک منہاج القرآن انٹرنیشنل کے مرکزی سیکرٹریٹ کا وزٹ کیا بلا شبہ منہاج القرآن کا مرکز حضور نبی مکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا عظیم مہمان خانہ ہے۔

کلک برائے تفصیل…

آج مورخہ23 نومبر 1992 کو منہاج القرآن اسلامک سنٹر میں آنے کا موقع ملا اور یہاں کے منتظمین و اراکین سے ملاقات کا شرف حاصل ہوا اور مختلف موضوع پر تبادلہ خیال بھی ہوا۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ ادارہ پر موثر طورپر دین اسلام کی بھر پور خدمت کا فریضہ سرانجام دے رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے عالم اسلام کو بین الاقوامی سطح پر درپیش چیلجز کا مقابلہ کرنے کے لئے جس عظیم تحریک کا آغاز کیا ہے وہ ایک عظیم کارنامہ ہے۔ ان کے جملہ خطاب، تصنیفات فروغ دین کے لئے انتہائی مؤثر ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

منہاج القرآن انٹرنیشنل اسلامک سنٹر ڈنمارک کے وزٹ کے موقع پر انہوں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ الحمد للہ اﷲ تعالیٰ نے اس دور میں عالم اسلام میں ڈاکٹر طاہرالقادری کو پیدا فرمایا۔ وہ یقینا اسلام کے فروغ و اشاعت میں بے مثال محنت اور کاوشیں کر رہے ہیں۔ اللہ تعالیٰ منہاج القرآن کو اس کے مقاصد میں کامیابی عطا فرمائے۔ (آمین)

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب اس دور کے عارف باللہ ہیں جب ڈاکٹر صاحب واپس رخصت ہونے لگے تو حضرت صوفی صاحب نے فرمایا کہ آپ گاڑی پر سوار ہوں میں پیدل چلوں گا۔ لیکن ڈاکٹر صاحب نے عرض کی کہ میں بھی آپ کے ساتھ پیدل چلوں گا یا آپ بھی گاڑی میں بیٹھیں لیکن صوفی صاحب نے حکماً فرمایا کہ آپ گاڑی میں بیٹھیں اور وہ گاڑی کے ساتھ کافی دور تک چلتے رہے

کلک برائے تفصیل…

میں صرف ڈاکٹر طاہرالقادری سے محبت اور اُن کی حضور غوث پاک رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے جو خاص نسبت اور عقید ت ہے۔ اس لئے میں اس تقریب سعید میں حاضر ہوا ہوں۔ میں ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب سے محبت بھی کرتا ہوں اور عقیدت بھی رکھتا ہوں اور بلا شبہ آج کے اس دور میں ڈاکٹر طاہرالقادری علومِ اسلامیہ فن خطابت اور تصنیف و تالیف میں یدطولی رکھتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

اس دور میں دعوت دین کا کام حکمت سے کیا جائے تو اس کے روشن اور مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں اور ہمارے قبلہ شیخ الاسلام نے آپ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی محبت کے پیغام کو انتہائی حکمت اور دلائل کے ساتھ پوری دنیا میں عام کر رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

حضرت شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری پوری دنیا میں تحریک منہاج القرآن کے ذریعے عشقِ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی شمع فروزاں کر رہے ہیں اور منتشر اُمتِ مسلمہ کو متحد کرنے کی بھرپور جدوجہد کر رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

میں اہل سنت و جماعت کی طرف سے ادارہ منہاج القرآن کے بانی ڈاکٹر پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری کی طرف دست تعاون و اعانت دراز کرتا ہوں اور اپنے جملہ متوسلین اور عقیدت مندوں سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ ڈاکٹر طاہرالقادری کا ساتھ دیں کہ وہ یہ راہ جس پر وہ امت کو لے جا رہے ہیں کسی اور طرف نہیں بلکہ گنبد خضراء کی طرف جا رہی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

آج محترم پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب کے فکر و پیغام کو عمل کے سانچے میں ڈھال کر معرکہ انقلاب بپا کرنے کی اشد ضرورت ہے کیونکہ اس مرد مجاہد کی سرپرستی میں چلنے والی اس تحریک کے ذریعے اللہ کے دین نے اپنے احیاء کے لئے ہمیں پکارا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ادارہ منہاج القرآن امت مسلمہ کے بکھرے ہوئے پتھروں کو ملا کر مضبوط پہاڑ کی صورت میں تبدیل کر دینا چاہتاہے۔ ملت اسلامیہ کو ایک لڑی میں پرونے کے اس عظیم مشن میں ہمیں بانی ادارہ علامہ ڈاکٹر طاہرالقادری کے ساتھ ہر ممکنہے طریقے سے تعاون کرنا چاہئے۔

کلک برائے تفصیل…

ادارہ منہاج القرآن حضور علیہ السلام کی خصوصی رحمتوں کا مظہر اور آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بے پایاں توجہات کا فیضان ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ علامہ محمد طاہرالقادری اس دور میں اللہ کی بندگی اور مخلوق کی بے لوث خدمت کی تحریک بن کر میدان عمل میں آئے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ادارہ منہاج القرآن کو دیکھ کر دلی مسرت ہوئی ہے ۔ علامہ طاہرالقادری نے جس خوش اسلوبی اور خوبصورت انتظام و انصرام کیا ہے وہ قابل ستائش ہے ۔ میری دعا ہے کہ اللہ تعالی اس ادارے اور اس کے قائد کو پانچ سو گناہ ترقی عطا فرمائے۔

کلک برائے تفصیل…

علامہ ڈاکٹر طاہرالقادری نے آج کے دور میں جب عظیم تحریک اور مشن کا آغاز کیا ہے، یہ محض ایک جماعت نہیں بلکہ یہ شرق سے غرب تک پھیل جانے والی اصلاح احوال اور امت کے بکھرے ہوئے شیرازے کو پھر سے ایک لڑی میں پرونے والی تحریک ہے۔

کلک برائے تفصیل…

پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری کو بارگاہ رسالتمآب صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور بارگاہ غوثیت سے جو فیوض وبرکات حاصل ہوئے ہیں وہ انہیں دوسروں تک پہنچا رہے ہیں اور میں اعلان کرتا ہوں کہ آج اپنے تمام مریدین اور سلسلہ عالیہ جماعتیہ علی پور شریف کے خلفاء کو حکم دیتا ہوں کہ وہ ادارہ منہاج القرآن میں شامل ہو کر اس مشن کو غالب کرنے کے لئے کوشش کریں۔

کلک برائے تفصیل…

بابا حضور ہر جگہ فرمایا کرتے تھے کہ ڈاکٹر طاہرالقادری کے ساتھ رہو، ہمارے بابا کے مریدین اور معتقدین سن لیں کہ منہاج القرآن حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا بتایا ہوا راستہ ہے اور حضور غوث پاک کا بتایا ہوا راستہ ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ادارہ منہاج القرآن کا ہر شعبہ حسن انتظام کا عظیم شاہکار ہے ۔ عاشق رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی محنت شاقہ اور علمی وادبی خدمات کی جتنی بھی تبریک کی جائے کم ہے۔

کلک برائے تفصیل…

آج بروز جمعۃ المبارک 8 مئی 1995 ادارہ منہاج القرآن کے اسلامک سنٹر لالہ موسیٰ میں آراکین ادارہ کی پر خلوص دعوت پر حاضر ہو کر روحانی تسکین اور بہتر کارگردگی کے اثرات کے روشن نتائج سے مطمئن ہوا دعا ہے کہ رب کریم بانی ادارہ کی تحریک و دعوت کے دلنشین تاثرات سے روحانی، ایمانی انقلاب برپا ہو جو ملت اسلامیہ کے منتشر افراد کی دلجمعی و اتحاد کی بنیاد فراہم کر کے قرآن و سنت کے نور سے کائنات کو امن وآشتی دے سکے۔

کلک برائے تفصیل…

حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی امت کے لئے اس دور زوال میں شیخ الاسلام کی شخصیت بہت قیمتی سرمایہ ہے۔ ان کی علمی، فکری، مذہبی، روحانی قیادت دین اسلام کی نشاۃ ثانیہ کی امین ہے وہ آج ہر درد مند اور اہل محبت کے دلوں کی دھڑکن بن چکے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

میری خوش نصیبی ہے کہ میں اس صدی میں ہوں جو صدی ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی صدی ہے۔ یہ لوگ صدیوں بعد پیدا ہوتے ہیں۔ ۔ ۔ صدیاں ان کی مقروض ہوتی ہیں۔ ۔ ۔ اور صدیوں تک ان پر کام ہوتا رہتا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

پروفیسر صاحب کی علمی ثقاہت اور مدلل گفتگو کا کوئی ثانی نہیں۔ ادارہ منہاج القرآن ان کی قیادت میں جس سبک رفتاری سے اشاعت دین اور مسلک اہل سنت کے فروغ کے لئے کوشش کر رہا ہے ہمیں اس کارخیر میں ان کا معاون بننا چاہئے۔

کلک برائے تفصیل…

ادارہ منہاج القرآن کے بانی ڈاکٹر طاہرالقادری دین حق کی سربلندی کے لئے دن رات کوشاں ہیں میری بارگاہ ایزدی میں دعا ہے کہ اس ادارہ کے نظام تعلیم و تربیت کے طفیل ظاہری علوم کے ساتھ ساتھ باطنی علوم کے چشمے بھی پھوٹیں۔

کلک برائے تفصیل…

اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم اور حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے صدقہ انتظام اور اس تحریک کے ہر نوجوان کا حضور علیہ السلام سے عشق قابل دید تھا۔ یہ سب کچھ ادارہ کے بانی علامہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی محنت، تربیت اور برائے راست سرپرستی اور اخلاص پر مبنی کاوشوں کا نتیجہ ہے۔

کلک برائے تفصیل…

29 جنوری 1988ء کو ادارہ منہاج القرآن میں حاضری پر سرپرست اعلیٰ پروفیسر علامہ محمد طاہرالقادری کے ساتھ ادارہ کے جملہ شعبہ جات کا مفصل مشاہدہ کیا۔ مجھے مسرت ہوئی کہ اہل سنت والجماعت کا یہ ادارہ فقید المثال ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب جب مجھ سے پڑھتے تھے اسی وقت سے یہ تمام طلباء سے منفرد و ممتاز تھے، اپنی کلاس کے سبق تو ان کو یاد ہی ہوتے تھے مگر وہ کتب جو ان کے نصاب میں نہیں تھیں ان پر مجھ سے گفتگو کرتے اور بحث کرتے تھے۔

کلک برائے تفصیل…

مجھے آج جامعہ منہاج القرآن میں حاضری کا موقع ملا اور یہاں قدیم و جدید علوم کا حسین امتزاج دیکھ کر اُمید پیدا ہوئی کہ دنیا بھر میں اسلام کی برتری کی موجودہ تحریک میں یہ اِدارہ گرانقدر خدمات سرانجام دے گا

کلک برائے تفصیل…

امت مسلمہ کے اتحاد کے لئے تحریک منہاج القرآن نے پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری کی قیادت میں جو بھرپور اور موثر انقلابی قدم اٹھایا ہے وہ اپنی مثال آپ ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری نے تحریک منہاج القرآن کے ذریعے ناموس رسالت کے لئے تحریک کا آغاز کیا ہے ہم انہیں مبارکباد پیش کرتے ہیں ۔ تحریک منہاج القرآن بلاشبہ امت مسلمہ کے وجود کے تحفظ اور بقا کی تحریک ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری نے فتنہ قادیانیت کی سرکوبی کے لئے جو جرات مندانہ قدم اٹھایا ہے وہ یقینا اس دور کے ’’محافظ ناموس ختم نبوت ہیں‘‘میری دعا ہے کہ اللہ تعالی بانی ادار ہ منہاج القرآن پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری کو اس کا امین بنائے

کلک برائے تفصیل…

اس دور میں تحریک منہاج القرآن غلبہ دین حق کے لئے بپا کی گئی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اس تحریک کے قائد ڈاکٹر طاہرالقادری کا پیغام اور مشن تھوڑے ہی عرصے میں باطل ایوانوں تک پہنچ گیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

پروفیسر طاہرالقادری کا دیت کے مسئلہ پر جرات مندانہ موقف اور علمی کردار سامنے آیا تو میں یہ سوچنے پر مجبور ہو گیا کہ یہ آدمی کچھ منفرد کام کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ دین کے اصل تصورات جو کہ اب دھندلا چکے ہیں اور ضرورت اس امر کی ہے کہ اسلام کا اصل چہرہ مخلوق خدا کے سامنے لایا جائے۔

کلک برائے تفصیل…

برصغیر کی سرزمین سے بہت سے مبلغین جنوبی افریقہ جاتے ہیں جن کا وہاں بنیادی مقصد نذر و نیاز بٹورنا اور لوگوں کو آپس میں لڑانا ہوتا ہے۔ لیکن ہم حیران ہیں کہ جب تحریک منہاج القرآن کے بانی ڈاکٹر طاہرالقادری وہاں جاتے ہیں تو یہ اتحاد امت کی بات کرتے ہیں ان کی ہر بات لوگوں کے دلوں میں اتر جاتی ہے

کلک برائے تفصیل…

اللہ تعالی نے اس دور فتن میں علامہ ڈاکٹر طاہرالقادری کو یہ عظیم سعادت اور توفیق دی کہ انہوں نے عرفان القرآن کے نام سے ایک ایسا ترجمہ قرآن حکیم کیا جس نے امت مسلمہ کو وحدت میں سمونے میں اہم کردار ادا کیا۔

کلک برائے تفصیل…

میرے نزدیک اللہ رب العزت اپنے دین کا کام قرآن و حدیث کی خدمت کے ذریعے ڈاکٹر طاہرالقادری سے لینا چاہتا ہے اور میں یقین سے کہتا ہوں کہ ڈاکٹرصاحب کے دروس قرآن کے حلقہ جات آقا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پسندیدہ حلقہ ہیں،

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کسی ایک فرد، مسلک یا گروہ کے قائد نہیں بلکہ ملت اسلامیہ کے عظیم رہنما ہیں۔ اتحاد بین المسلمین کے داعی ہونے کی حیثیت سے بہت سی مشکلات کے باوجود انہوں نے ہمت اور ثابت قدمی سے دنیا میں اسلام کی خدمت کی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر صاحب ایک عظیم، ذہین شعلہ بیان مقرر ہیں۔ اپنی تنظیم کو نہایت ہی منظم انداز میں لیکر رواں دواں ہیں اور سب سے اہم بات جو میں نے ان میں دیکھی وہ وسعت مطالعہ ہے۔ وہ ہر موضوع پر بغیر کسی جھجک کے کئی کئی گھنٹے گفتگو کر سکتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

میرے خیال میں اتحاد، متحرک جدوجہد اور روشن خیال اصلاح موجودہ صدی کی پکار ہے اور پروفیسر صاحب اور ان کی تحریک اس چیلنج سے عہدہ برآ ہونے کی صلاحیت اور قابلیت رکھتی ہے۔ میں ان کی اور اسلام کی کامیابی کے لئے دعا گو ہوں۔

کلک برائے تفصیل…

یوں تو میری نظر میں پاکستان کی تمام اہم شخصیات ہیں لیکن موجودہ دورمیں طاہرالقادری کی شخصیت بہت اثر انگیز ہے۔ وہ ایک بہترین عالم اور مشنری جذبے کے تحت کام کرنے والے کامیاب انسان بھی ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری اللہ سے محبت کرنے والے بھی ہیں اور اس سے ڈرنے والے بھی۔ حضور علیہ الصلوۃ والسلام کے ساتھ عشق انتہا درجے کا ہے اور حضور سیدنا غوث الاعظم رضی اللہ عنہ کے ساتھ ان کا روحانی تعلق کسی شک و شبہ سے بالا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

یونیورسٹی ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کے سر پر سجے ہوئے تاج میں جڑے عالم اسلام اور پاکستان کے لئے کی جانے والی خدمات کے ہیروں میں سے ایک چمکتا دمکتا ہیرا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام ڈاکٹر محمدطاہرالقادری نے پاکستان میں تعلیمی انقلاب برپا کرنے اور اخلاقی و روحانی زندگی کی روبہ زوال قدروں کو بحال کرنے کیلئے جو خدمات سرانجام دیں وہ قابل ستائش ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

اس دور کا مجدد اور مصلح صحیح معنوں میں وہی ہوگا جو لخت لخت امت کو متحد و متفق کرے گا، اس سلسلے میں ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کے زیر سایہ منہاج القرآن اسلامک یونیورسٹی کا تعلیمی نصاب اور اس کا تربیتی نظام قابل رشک بھی ہے اور قابل تقلید بھی۔

کلک برائے تفصیل…

آج امت مسلمہ جس نازک دور سے گزر رہی ہے اور عالم اسلام کو جو مسائل درپیش ہیں ان حالات میں ادارہ منہاج القرآن کے بانی و سرپرست پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری کی ذات ہی عالمی سطح پر امت مسلمہ کو درپیش چیلنجز سے نکلنے کا واضح حل دے سکتی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

آج ادارہ منہاج القرآن کے بانی ڈاکٹر طاہرالقادری نے اپنی علمی پختگی کا لوہا منوا لیا ہے۔ انہوں نے تھوڑی عمر میں جس انداز میں عالمی سطح پر تحریک کو متعارف کرایا ہے، وہ ایک مسلمہ حقیقت ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر صاحب نے علمی میدان میں سینکٹروں موضوعات پر کتب لکھی ہے اور حدیث کے موضوع پر بہت کام کیا ہے جو کہ ایک بہت بڑا اعزاز ہے اللہ تعالیٰ انھیں مزید علم کی ترقی کے لئے کام کرنے کی توفیق عطا فرمائے

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری ایک فرد نہیں بلکہ ادارہ ہیں اور اللہ نے انہیں علم کی خاص دولت سے نوازا۔ سینکڑوں تصانیف اور ہزاروں موضوعات پر لیکچرز ایک عام آدمی کے بس کی بات نہیں ہے۔ وہ بلاشبہ ملت اسلامیہ کا فخر ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

میں نے شیخ الاسلام کی مینجمنٹ اور دیگر امور پر جو مضبوط گرفت دیکھی وہ بہت کم لوگوں کو نصیب ہوتی ہے۔ آپ ہمہ جہتی شخصیت ہیں اور ان کی عظمت کا نشان یہ ہے ابھی بھی علم کے حصول کے لئے سرگرداں رہتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ہمیں ڈاکٹر طاہرالقادری کے پیغام اور مشن کو ان کی کتب و کیسٹس کی صورت میں قریہ قریہ نگر نگر پہنچانا ہو گا تاکہ پھر سے ہر طرف دین اسلام اور عشق ومحبت رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پھریرے لہرانے لگیں۔

کلک برائے تفصیل…

ادارہ منہاج القرآن فروغ عشق رسول کی ایک عالمگیر تحریک ہے جو صحیح معنوں میں نوجوانوں کے دلوں میں حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ عشق کی شمع روشن کر رہی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میں محض سیر و تفریح کی غرض سے پاکستان آیا تھا۔ یہاں پر اپنے دوست کے ذریعے ڈاکٹر طاہرالقادری سے ملاقات ہوئی، ان کی سنگت میں کچھ وقت گزرا تو انہوں نے میرے دل کی دنیا بدل دی۔ اللہ کے ذکر سے میرے اندر ایک عجیب سی کیفیت پیدا کر دی اور مجھے چاروں طرف سفید روشنی نظر آنے لگی۔

کلک برائے تفصیل…

میں خدا کی ذات پر یقین نہیں رکھتا تھا لیکن پروفیسر صاحب نے اپنے مضبوط عقلی دلائل سے مجھے قائل کر لیا اور میرا دل خدا کی صداقت و حقانیت اور وجود کا قائل ہو گیا۔ مجھے خوشی ہے کہ میں ڈاکٹر طاہرالقادری کے سبب اسلام قبول کر لیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

قبول اسلام کے بعد اس نے اپنے محسوسات بیان کرتے کہا کہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے جب وجود باری تعالی پر مجھے دلائل سے قائل کر لیا اور جب میرے دل پر ہاتھ رکھا تو میں نے اچانک اپنے اندر ایک عجیب طاقت کو پیدا ہوتے ہوئے محسوس کیا

کلک برائے تفصیل…

آج عالم اسلام کو جن جہتوں پر تبلیغ کی ضرورت ہے میرے خیال میں ڈاکٹر طاہرالقادری وہ فرض اچھے انداز میں پورا کر رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی سربراہی میں منہاج القرآن مذاہب عالم میں اتحاد اور باہمی رواداری کو فروغ دے رہا ہے۔ ڈاکٹر طاہرالقادری ایک روشن خیال رہنما ہیں، جن کے فکر سے دنیا میں قیام امن میں مدد مل رہی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے منہاج القرآن کی جامع مسجد کے دروازے ہمارے لئے عبادت کرنے کیلئے کھول دیئے۔ ڈاکٹر صاحب نے پاکستان میں روحانی طور پر ایک نئے باب کا آغاز کیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میں ڈاکٹر طاہرالقادری کے خطابات اور تصانیف سے استفادہ کرتا ہوں اور انسانی حقوق کے تحفظ اور دیگر بین الاقوامی مسائل پر ان کا موقف بڑا مدلل اور مذہبی تعصبات سے پاک ہوتا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میں سمجھتا ہوں جو لوگ صرف علمی و ادبی بنیادوں پر کسی دوسری شخصیت سے خائف ہوتے ہیں دراصل وہ اپنے آپ سے خائف ہوتے ہیں۔ پروفیسر ڈاکٹر طاہرالقادری ایک کامیاب انسان ہیں۔ مستقبل میں ان کی حکمت عملی بجا طورپر انہیں عزت افزائی سے سر فراز کرے گی۔

کلک برائے تفصیل…

جب ڈاکٹر طاہرالقادری جیسی شخصیت اسلام کے حوالے سے اپنا نقطۂ نظر دنیا کے سامنے رکھتی ہے تو مجھے اطمینان، خوشی اور فخر محسوس ہوتا ہے کہ ہم اسلام جیسے آفاقی مذہب کے پیروکار ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ہماری نوجوان نسل کو اسلامی اور جدید تعلیم کی اشد ضرورت ہے، نجی تعلیمی اداروں میں منہاج القرآن کی کامیابیاں قابل تحسین ہیں اور طاہرالقادری چونکہ اس تحریک کے بانی ہیں اس لئے تمام تر کریڈٹ بھی انہیں ہی جاتا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی عالمِ اسلام کے لئے مذہبی سیاسی سماجی اور تعلیمی خدمات کا ستائش ہے ڈاکٹر صاحب نے دین کی تجدید و احیا ء اور اسلام کا اثرِ حاضر کے جدید تقاضوں سے ربط قائم کرنے میں ایک عظیم اور تاریخ ساز کارنامہ سرانجام دیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میں ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کو انتہائی عزت احترام کی نگاہ سے دیکھتا ہوں وہ ایک عالیٰ پائے کی بااصول شخصیت ہیں ۔ انھوں نے کبھی اصولوں پر سمجھوتا نہیں کیا وہ حق پر مبنی فیصلہ کرتے ہوئے کبھی کسی کی پروہ نہیں کرتے

کلک برائے تفصیل…

بین المذاہب ہم آہنگی کی تعلیم ڈاکٹر طاہرالقادری سے بہتر کوئی نہیں دے سکتا۔ پوری دنیا میں امن و بھائی چارہ پیدا کرنے میں ان کی خدمات قابل تحسین ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری نے آج تک حکومت پاکستان یا حکومت کے کسی ادارے سے کسی قسم کی کوئی مدد لئے بغیر جو ترقی کی ہے وہ آج کے دور میں کسی معجزے سے کم نہیں۔

کلک برائے تفصیل…

دنیا جانتی ہے کہ جناب ڈاکٹر طاہرالقادری نے ایک چھوٹے سے ادارے سے کام شروع کیا اور آج الحمد للہ اپنی ذاتی کاوشوں اور محنت کے ذریعے نہ صرف اندرون ملک بلکہ پوری دنیا میں اپنے تعلیمی و تربیتی اداروں کا نیٹ ورک قائم کر لیا ہے

کلک برائے تفصیل…

محترم ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب کی سرپرستی میں منہاج القرآن عالمی سطح پر اسلام کی اصل روح کو متعارف کروانے اور سرکار دو عالم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کوبحیثیت عالمی پیامبر امن کے طور پر ان کی سیرتِ مبارکہ کو اُجاگر کرنے کا عظیم فریضہ سرانجام دے رہی ہے

کلک برائے تفصیل…

مجھے آج خوشی ہے کہ میں پاکستان کے ایک مایہ ناز مذہبی تعلیمی ادارے میں ان طلبہ سے مخاطب ہوں جو دین کے ساتھ جدید علوم سے بھی آراستہ ہو رہے ہیں محترم ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے اس ادارہ کو قائم کر کے قرون اولیٰ کے مسلمانوں کی یاد تازہ کر دی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب نے اپنے ادارے کو منفرد بنایا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اشاعت اسلام، فروغ اتحاد امت اور دعوت دین کے لئے جدید ٹیکنالوجی کے میدان میں یہ ادارہ دنیا بھر کی اسلامی تحریکوں سے بازی لے گیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

جناب ڈاکٹر طاہرالقادری نے نوجوان نسل میں قرآن فہمی کا ادراک اور ان کے قلوب میں دین مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے لئے جو تڑپ پیدا کی ہے وہ صرف قابل تحسین نہیں بلکہ لائق تقلید بھی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

جہاں تک پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی شخصیت کا تعلق ہے تو بلاشبہ وہ ایک کرشماتی شخصیت کے مالک ہیں۔ آج کے دور میں جتنی محنت اور لگن سے انہوں نے اپنا نیٹ ورک بنایا ہے، یہ عام آدمی کے بس کی بات نہیں۔

کلک برائے تفصیل…

تحریک منہاج القرآن بین الاقوامی سطح پر جو اسلامی تعلیمات کی اشاعت کا کام کر رہی ہے وہ قابل ستائش ہے، منہاج القرآن کے مرکز پر جن راہنماؤں سے ملاقات ہوئی ان کے اخلاق، کردار اور گفتگو میں ایک خاص تربیت کا رنگ نمایاں تھا۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کے علم کا زمانہ معترف ہے اور ساری دنیا میں تحریک منہاج القرآن کے قائم کردہ اسلامک سینٹرز اسلام کیلئے گراں قدر خدمات انجام دے رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر علامہ طاہرالقادری کے علمی مقام کا ہر شخص معترف ہے اور جب میں علامہ طاہرالقادری کی پرعزم اور نوجان علمی فکری شخصیت کو دیکھتا ہوں تو علامہ اقبال کے الفاظ میں زبان حال سے پکار اٹھتا ہوں کہ ’’ایسی چنگاری بھی یا رب اپنی خاکستر میں تھی‘‘

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب علم کے بحر بیکراں ہیں۔ علم کی جستجو کرنے والوں اور متلاشیان علم و حکمت کے لئے اس دور میں ڈاکٹر طاہرالقادری اتھارٹی کی حیثیت رکھتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹرطاہرالقادری نے سرزمین پاکستان میں شرافت کی سیاست کے کلچر کو فروغ دیا اور تحریک منہاج القرآن کے تحت فرقہ واریت کے ناسور کا خاتمہ اور اتحاد امت کے لئے جو علمی، فکری و عملی کام کیا ہے وہ کسی سے پوشیدہ نہیں۔

کلک برائے تفصیل…

طاہرالقادری صاحب بھی ایسے لوگوں میں سے ایک ہیں کہ جن کے جذبوں میں ولولہ بھی ہے، سچائی بھی ہے یا یوں کہہ لیجئے کہ ان کے جذبے جوان ہیں۔ ہمیں آج کے دور میں ایسے لیڈروں کی اشد ضرورت ہے، جو قوم کی صحیح سمت میں رہنمائی کریں۔

کلک برائے تفصیل…

مجھے بھی دین کے مسئلہ پر جب کبھی رہنمائی کی ضرورت ہوتی ہے تو میری نگاہیں ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب پر مرکوز ہوجاتی ہیں۔ شیخ الاسلام کی شخصیت علم دوست شخصیت ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میرے خیال میں ڈاکٹر طاہرالقادری کے فکری مقام اور علمی وسعت کو ناپنا بہت مشکل کام ہے۔ ایک منفرد بات اور حیرت انگیز امر ہے کہ ایک شخص اتنے مختصر عرصہ میں وہ سب کچھ کر ڈالے جو ڈاکٹر صاحب نے کیا۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر صاحب کی شخصیت کا نمایاں پہلو یہ ہے کہ آپ کے پاس نہ صرف دینی علوم کا خزانہ موجود ہے، بلکہ دنیوی و سائنسی علوم پر بھی کامل دسترس رکھتے ہیں۔ نوجوان نسل ڈاکٹر طاہرالقادری سے اسی بناء پر بہت متاثر ہے۔

کلک برائے تفصیل…

مجھے خوشی ہے کہ اللہ تعالیٰ نے اپنے بندوں کی راہنمائی کے لیے بہت سے لوگوں کو توفیق دی اور علامہ ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب بھی بہت خوبصورت طریقے سے دین کی باتیں بتاتے ہیں اور خاص طور پر یہ ان کی تقریروں کی حقوق اللہ کے ساتھ ساتھ حقوق العباد کا بھی درس ہوتا ہے

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام کی مثال بہتے ہوئے سمندر کی ہے جو جتنا بڑا ظرف / برتن لے کر آئے گا اتنا ہی حصہ سمیٹ لے گا۔ ہمارے معاشرے کا المیہ ہے کہ زندہ لوگوں کی خدمات کو سراہا نہیں جاتا۔

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام کسی ایک مسلک یا فرقے کے قائد نہیں بلکہ ملت اسلامیہ کے رہنما ہیں۔ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی فکر صرف ایک مکتبہ فکر کی میراث نہیں بلکہ عالم اسلام کے ہر شخص کا دعویٰ ہے کہ یہ قائد ہمارا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری کی عظمت کا سب سے بڑا سبب یہ ہے کہ وہ سرورِ انبیاء صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دیوانے ہیں۔ ان کی شخصیت سے محنت، اخلاص، عشق و محبت کا درس ملتا ہے اور بلاشبہ نابغہ روزگار ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے تحریک منہاج القرآن کو جس انداز میں منظم کیا وہ صرف انہی کا خاصہ ہے ۔ اگر ایسا رہنما پاکستان کو مل جائے تو اس ملک کا مقدر سنور جائے گا۔ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے اپنی علمی اور تحقیقی کاوشوں سے لوگوں میں یہ احساس اجاگر کر دیا ہے کہ تمام اختلافات کو فراموش کرکے یکجا ہونا اب امت مسلمہ کی ضرورت ہے ۔ ۔ ۔

کلک برائے تفصیل…

سابق سینیٹر تاج حیدر نے کہا کہ ہمت، استقلال اور ثابت قدمی کے ساتھ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی خدمات اور افکار و نظر یات امت مسلمہ کے لئے مشعل راہ ہیں کیونکہ وہ حسینی کردار کے امین ہیں۔ اور آج ایسی شخصیت کی ملک و قوم اور بالخصوص عالم اسلام کو ضرورت ہے ۔ ۔ ۔ ۔

کلک برائے تفصیل…

محترم ڈاکٹر اویس فاروقی نے کہا کہ ڈاکٹر طاہرالقادری کا امت مسلمہ کے اتحاد کے لئے عملی اقدامات کرنا غلبہ اسلام کی جانب ایک قدم ہے۔ امت کی موجودہ صورت حال نہایت ہی گھمبیر ہے اس وقت اگر کوئی لیڈنگ رول ادا کر سکنے کے قابل ہے تو میری نگاہ ڈاکٹر صاحب پر ہی ٹھہرتی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

جناب ڈاکٹر طاہرالقادری کی عظیم قیادت ہمارے لئے قابل فخر ہے منہاج القرآن کے اغراض و مقاصد سے متاثر ہو کر میں نے اس کی تا حیات ممبر شپ حاصل کی ہے۔ اللہ تعالیٰ اس ادارے کو اپنے عظیم مقاصد میں کامیابی عطا فرمائے۔

کلک برائے تفصیل…

میں نے اپنی آنکھوں سے دیکھا کہ ایک وسیع و عریض ویمبلے ہال میں تل دھرنے کو جگہ نہ تھی، یورپ میں بسنے والے لوگ صرف عالم اسلام کی ان عظیم ہستیوں کی ایک جھلک دیکھنے کے لئے جوق در جوق اس ہال کی طرف بڑھ رہے تھے، یہ تمام مناظر دیکھ کر مجھے یقین ہو گیا کہ تحریک منہاج القرآن کے عالمگیر مشن کو قادری صاحب جو کہ ایک مہم جو شخصیت ہیں، ضرور پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری جامعہ اسلامیہ منہاج القرآن میں ایک ایسی فوج تیار کر رہے ہیں جو ان شاء اللہ مستقبل قریب میں دنیا میں اسلام کی عظمت کے جھنڈے لہرائے گی، قادری صاحب نے سیاست کی دلدل سے کنارہ کشی اختیار کر کے بہت راست اقدام اٹھایا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر علامہ طاہرالقادری کمال کے خطیب ہیں، علمی اور عوامی انداز کے امتزاج سے انہوں نے اپنے اس ہنر کو ایک موثر رنگ دیا ہے، قومی ایشوز پر ان کی گفتگو مدلل اور اعداد و شمار پر مبنی ہوتی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر صاحب کا خاصہ ہے کہ وہ منطق کی زبان میں بات کرتے ہیں اور مخالف کو بے دلیل کر دیتے ہیں، طاہرالقادری نے ایک عالم دین ہونے کے ناطے لبرل ازم (روشن خیال ہونے) کا ہمیشہ مظاہرہ کیا ہے اور کبھی کسی معاملے میں انتہاپسندی کا ثبوت نہیں دیا۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کیا ہیں۔ لیکن آج سب کچھ اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے اور یقین ہو گیا ہے کہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری ایک بین الاقوامی سطح کی عظیم شخصیت ہیں جن کا کام زندگی کے ہر میدان میں نمایاں ہے۔

کلک برائے تفصیل…

پروفیسر طاہرالقادری ایک محنتی لگن رکھنے والے اور اپنے آورشتوں کے حصول کے لئے دن کو دن اور رات کو رات سمجھنے والے نہیں ہیں، وہ اس کیمیادان کی مانند ہیں جو ہزاروں ٹن کیمیاوی مواد کو کھوجنے، جلانے اور تجزیہ کرنے کے بعد صرف چند ماشے، چنداونس ریڈیم دریافت کرتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر پروفیسر محمدطاہرالقادری کے فلسفہ انقلاب کو سمجھ لینا اکیسویں صدی کی روح کو سمجھ لینا ہے ۔ بسا اوقات محسوس ہوتا ہے کہ تحریک منہاج القرآن کا قیام علامہ اقبال کی خواہش کی عملی تعبیر تھا۔

کلک برائے تفصیل…

پروفیسر ڈاکٹر محمدطاہرالقادری کا شمار یقینا پاکستان کی ان شخصیات میں ہوتا ہے جن کے شجر علمی کے نقوش انسانی دلوں پر ثبت ہیں، وہ علم کے میدان میں اپنی صلاحیتوں کو منوا چکے ہیں، ان کا ہر اجتماع جلسہ اپنے نظم و ضبط اور تعداد کے اعتبار سے عظیم الشان ہوتا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب سراپا علم و عمل ہیں اور موجودہ دور میں وہ عالم اسلام کے لئے ایک لیڈنگ مین کی حیثیت رکھتے ہیں۔ علم کا کوئی شعبہ ایسا نہیں جس میں آپ کو دسترس حاصل نہ ہو۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری عالم اسلام کی ایک ایسی بے مثال عظیم شخصیت ہیں جن کی ذات کا احاطہ لفظوں میں نہیں کیا جا سکتا۔ شاید اہل علم کی لغت میں بھی وہ الفاظ نہیں ہیں جن کے ذریعے ان کی عالمگیر شخصیت کو ناپا یا تولا جا سکے۔

کلک برائے تفصیل…

تحریک منہاج القرآن اس دور میں دین اسلام کے عالمگیر فروغ اشاعت کا جو کام کر رہی ہے وہ لائق صد تحسین ہے۔ اس کی سارا کریڈٹ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کو جاتا ہے جن کی روشن خیال فکر و سوچ نے ہم جیسے لوگوں کو بھی ایک ملاقات ہی میں اپنا گرویدہ بنا لیا۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب نے امت مسلمہ کو حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے وابسطہ کرنے کے لئے جو کاوشیں کی ہیں وہ لائق صد تحسین ہیں، آپ اصل و حقیقی معنوں میں عاشقِ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہیں اور ایسے عاشق کہ دوسروں کو بھی اس وادی عشق کا مسافر بنا دیتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے اپنے علم و فکر سے اسلام کو ایک پر امن دین کے طور پر دنیا کے سامنے متعارف کرایا ہے۔ عالم اسلام کے لیے آپ کی خدمات کسی قیمت کی محتاج نہیں ہیں۔ آپ کے بے لوث خدمات نے مسلمانوں کا سر پھر فخر سے بلند کر دیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

میں اللہ تعالیٰ کوحاضر ناضر جان کر یہ بات کہ رہا ہوں کہ اس وقت عالم اسلام میں تحریک منہاج القرآن سے بڑی نہ کوئی تحریک ہے اور نہ ہی ڈاکٹر محمد طاہرالقادری جیسا کوئی راہنما ہے۔ ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب عصر حاضر میں اسلام نشاۃ ثانیہ اور احیائے دین کا کام کر رہے ہیں وہ علم و عمل کا عظیم پیکر ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

یہ وہ دور ہے جب نوجوان نسل ہمیں اپنا ہیرو مانتی ہے لیکن ہمارے لیے یہ ایک اعزاز کی بات بھی ہے کہ ہم شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کو اپنا آئیڈیل مانتے ہیں۔ میں ذاتی طور پر آپ کے علم و عمل سے بے حد متاثر ہوں۔ کیو ٹی وی وہ ذریعہ ہے جس نے ہم کو شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری سے شناسائی دی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

2002 میں کویت میں منہاج القرآن اسلامک سنٹر کے وزٹ کے موقع پر اپنے تاثرات میں کہا کہ ڈاکٹر محمدطاہرالقادری میرے لئے انتہائی قابل احترام ہیں، وہ خداداد صلاحیتوں کے مالک ہیں، ان کی شخصیت علمیت، دیانتداری، معاملہ فہمی اور ملک وقوم سے سچی محبت اور لا تعداد خوبیوں سے مالا مال ہے اور ایسی شخصیت ہی نابغہ عصر کہلاتی ہے

کلک برائے تفصیل…

میرے نزدیک ڈاکٹر محمد طاہرالقادری ایک فرد یا شخصیت کا نام نہیں بلکہ آپ وہ ادارہ، تحریک اور شمع علم ہے جس کی روشنی دنیا کے کونے کونے میں پھیل چکی ہے۔ جس طرح اللہ تعالیٰ نے ہم سب کو پیدا کیا اور ایمان کی دولت و نعمت سے نوازا

کلک برائے تفصیل…

جب تک پروفسر ڈاکٹر محمد طاہرالقادری جیسے مبلغ اسلام موجود ہیں۔ اسلام دنیا کا نقشہ بدلتا رہے گا۔ ان کی خدمات کا اعتراف تو ہر کس و ناکس نے کیا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

TV کے نامور اداکار محترم فردوس جمال نے کہا کہ شیخ الاسلام کرشماتی شخصیت کے مالک ہیں۔ مختصر سے وقت میں ان کی ہمہ جہتی خدمات اور کارنامے عشق کی دولت کے بغیر ممکن نہیں۔ گویا آج ہم ایک عاشق کی سالگرہ کے موقع پر انہیں خراج تحسین پیش کر رہے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

اداکار ندیم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر طاہرالقادری صاحب ہمارے روحانی، مذہبی اور سیاسی قائد ہیں۔ انہوں نے اپنے خطابات کے ذریعے ہم جیسے دنیاداروں کے دل کی دنیا بدل دی ہے۔ ہم اللہ تعالی کا شکر ادا کرتے ہیں کہ اس نے اس دور میں ہم گناہگاروں کو ڈاکٹر طاہرالقادری جیسی عظیم ہستی کی سنگت عطا کی۔

کلک برائے تفصیل…

1994ء میں جامعہ اسلامیہ منہاج القرآن میں محفل مشاہرہ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ مجھے آج ادارہ منہاج القرآن میں طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے بہت خوشی ہو رہی ہے، ہم ڈاکٹر طاہرالقادری کے مداح ہیں اور عرصہ سے ان کے علم سے مستفید ہو رہے ہیں، ڈاکٹر صاحب کی شخصیت میں ایک سحر ہے جس سے ہر شخص مرعوب ہو جاتا ہے

کلک برائے تفصیل…

معروف اداکار شجاعت ہاشمی نے منہاج یونیورسٹی کے ہفتۂ تقریبات میں بطور مہمان شرکت کی اور اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب صد محترم و مکرم کا یہ کارنامہ جو آج اپنی آنکھوں سے دیکھا اور محسوس کیا، ان شاء اللہ قیامت تک جاری رہے گا، کہ یہ عین اس اسلام کی بات ہے جس کی حفاظت کا وعدہ خود اللہ ربّ العزت نے فرمایا ہے۔ میری تمام محبتوں اور تمنائیں محترم قائد اور ان کے ادارے اور تحریک کے لئے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

محترم عثمان پیرزادہ (TV آرٹسٹ) نے کہا کہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری صاحب کو اللہ تعالیٰ نے بے انتہا علم سے نوازا ہے، بلاشبہ وہ دینی علم ہی نہیں بلکہ فنونِ لطیفہ اور دیگر کئی علوم پر بھی دسترس رکھتے ہیں۔ ان کی فنون لطیفہ اور دیگر موضوعات پر علمی گرفت نے مجھے پہلی ہی ملاقات میں حیران کر دیا اور بعد ازاں یہ حیرانگی بڑھتی گئی۔ ان سے ملاقات کے بعد سب سے پہلا اثر مجھے ان کی شخصیت کے حوالے سے جو محسوس ہوا وہ یہ تھا کہ میرا قلب و ذہن یہ کہہ رہا تھا کہ یہ واقعتاً ایک سچا اور مخلص انسان ہے۔

کلک برائے تفصیل…

شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی زیر قیادت تحریک منہاج القرآن بین الاقوامی سطح پر فروغ دین اسلام کا عظیم فریضہ سرانجام دے رہی ہے۔ ڈاکٹر طاہرالقادری کی آقا دو جہاں صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے عشق و محبت کا والہانہ انداز اور پھر اس محبت کے پیغام کو پوری دنیا میں پھیلانے کا انداز لائق صد تحسین ہے ڈاکٹر صاحب کا بات سمجھانے کا اسلوب انتہائی آسان اور دلائل سے بھر پور ہوتا ہے۔ جس سے ہر شخص قائل ہو جاتا ہے۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر طاہرالقادری ایک صاف اور شفاف کردار کے مالک شخصیت ہیں وہ علم کی روشنی ہیں، انہوں نے پوری دنیا میں اسلام کا پیغام محبت اور امن عام کیا ہے، ڈاکٹر طاہرالقادری بلاشبہ امن کے سفیر ہیں، وہ تنگ نظر نہیں ماڈریٹ ہیں، وہ اللہ کے غضب سے ڈر کر اسلام کی طرف نہیں بلاتے بلکہ اس کی رحمت کی امید دلاتے ہوئے اسلام کی دعوت دیتے ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کا نام سنا تھا لیکن آپ سے ملاقات کا موقع نہیں مل سکا۔ 2008ء ستائسویں شب کو جب تحریک منہاج القرآن کے عالمی روحانی اجتماع میں حاضر ہوا تو مجھے آپ کو براہ راست سننے کا موقع ملا۔ مجھے پہلی بار یہاں آکر احساس ہوا کی موجودہ دور میں عالم اسلام میں کوئی ایسی شخصیت بھی موجود ہے جو اپنے قدردانوں سے نہیں بلکہ اپنے علم و عمل سے پہچانی جاتی ہے۔

کلک برائے تفصیل…

اسلام وہ دین ہے جس نے زندگی میں ثقافتی و سماجی سطح پر ہر طبقہ فکر کی حوصلہ افزائی کی لیکن بد قسمتی سے ہمارے ملک میں عوام نے لاعلمی کی وجہ سے فنکار برادری کی مناسب حوصلہ افزائی نہیں کی۔ دوسری طرف شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے ہر طبقہ فکر کو اپنے قریب کیا۔ ان میں فنکار برادری بھی شامل ہے۔ مجھے پہلی بار شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری سے جب 2007ء کے شہر اعتکاف میں ملاقات کا موقع ملا تو میں حیران رہ گیا کہ آپ انتہائی سادہ دل اور سادہ لوح ہیں۔

کلک برائے تفصیل…

میں شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کے ساتھ اس وقت انتہائی متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکا جب آپ کے ساتھ رمضان المبارک 2007ء میں افطار کا موقع ملا۔ اس وقت ہم پہلی ملاقات میں آپ سے بے حد متاثر ہوا۔ یہ وہ موقع تھا